ٹیکنا لوجی

فیس بک میں ٹوئٹرتھریڈزجیسےفیچرکی آزمائش کیوں کی جارہی ہے؟

اس فیچر سے لوگوں کے لیے وقت کے ساتھ کسی موضوع کے بارے میں اپ ڈیٹس کو فالو کرنا آسان ہوجائے گا

فیس بک میں ٹوئٹرتھریڈزجیسےفیچرکی آزمائش کیوں کی جارہی ہے؟ فیس بک میں ٹوئٹرتھریڈزجیسےفیچرکی آزمائش شروع کردی گئی ہے۔ یہ فیچرفی الحال کچھ معروف شخصیات کو دستیاب ہوگا جس میں فیس بک کی جانب سےایک نئی پوسٹ کواس سےمتعلق سابقہ پوسٹ سےکنکٹ کیا جاسکےگا۔ اس فیچرسےلوگوں کےلیےوقت کےساتھ کسی موضوع کے بارے میں اپ ڈیٹس کوفالوکرنا آسان ہوجائےگا۔ جب نئی پوسٹ فالوورزکی نیوزفیڈ پرنظرآئےگی تو اس میں یہ بھی دیکھا جاسکےگا کہ اس تھریڈ میں دیگرپوسٹس کونسی ہیں۔ سوشل میڈیا کنسلٹنٹ میٹ نوارا نےاس فیچرکوسب سےپہلےدریافت کیا اورٹوئٹرپراس کےاسکرین شاٹ شیئرکیے۔

بعد ازاں فیس بک نےبھی اس فیچرکی آزمائش کی تصدیق کرتےہوئےبتایا کہ چند عوامی شخصیات پراس کو ٹیسٹ کیا جارہا ہے۔ کمپنی نے بتایا کہ ان تھریڈ پوسٹس مٰں ایک ویو پوسٹ تھریڈ بٹن ہوگا تاکہ لوگ آسانی سے اس میں موجود تمام پوسٹس کو دیکھ سکیں۔ جب کوئی صارف اس بٹن پر کلک کرے گا تو ایک دوسرے سے منسلک تمام پوسٹس اس کے سامنے ہوں گی۔ کمپنی نے یہ واضح نہیں کیا کہ یہ فیچر صرف عوامی شخصیات تک محدود رہے گا یا کاروباری اداروں یا فیس بک گروپس میں بھی دستیاب ہوگا۔

تھریڈز ٹوئٹر میں ایک کارآمد فیچر ہے جس میں حروف کی تعداد محدود ہوتی ہے۔ ٹوئٹر تھریڈز سے لوگ زیادہ طویل پوسٹس کرنے کے قابل ہوجاتے ہیں۔ فیس بک میں اس سے کیا فائدہ ہوگا یہ تو آنے والے وقت میں ہی معلوم ہوسکے گا تاہم یہ فیچر صحافیوں یا سرکاری عہدیداران کے لیے مفید ثابت ہوسکتا ہے جو نیوز ایونٹس کو تھریڈز کے ذریعے لوگوں تک پہنچاسکیں گے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.