ٹیکنا لوجی

ایلون مسک کیخلاف دائر مقدمے کی سماعت ، جج نے بڑا فیصلہ سنا دیا

وہ ایسی دستاویزات بھی پیش کرے جن سے ثابت ہوتا ہو کہ یہ اکاؤنٹس جانچ پڑتال کے لیے منتخب کیے گئے تھے: ٹوئٹر کو ہدایت

ٹوئٹر کی جانب سے ایلون مسک کے خلاف دائر مقدمے کی سماعت پر جج نے بڑا فیصلہ سناتے ہوئے مکمل ڈیٹا تک رسائی کی درخواست کو مسترد کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جج نے ٹوئٹر کے ڈیٹا کے کچھ حصے تک ایلون مسک کو رسائی دینے پر اتفاق کیا ہے اور سوشل میڈیا نیٹ ورک کو وہ ڈیٹا دنیا کے امیر ترین شخص کو فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔ جج کی جانب سے ٹوئٹر کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ ایسے 9 ہزار سے زیادہ اکاؤنٹس کا ڈیٹا ایلون مسک کے حوالے کرے جن کی جانچ پڑتال 2021 کی چوتھی سہ ماہی کے دوران سوشل میڈیا نیٹ ورک نے کی تھی تاکہ پلیٹ فارم میں اسپام اکاؤنٹس کی تعداد کا تعین کرسکے۔ اسی طرح ٹوئٹر کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ایسی دستاویزات بھی پیش کرے جن سے ثابت ہوتا ہو کہ یہ اکاؤنٹس جانچ پڑتال کے لیے منتخب کیے گئے تھے۔ ایلون مسک کے وکلا نے ٹوئٹر کے 20 کروڑ سے زیادہ اکانٹس کے ڈیٹا تک رسائی کی درخواست کی تھی جس کو مسترد کردیا گیا۔ ٹوئٹر کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا تھا کہ 2021 کی چوتھی سہ ماہی کے دوران جو جانچ پڑتال کی گئی تھی اس کا ڈیٹا اب موجود نہیں اور اسے دوبارہ تیار کرنے میں 2 ہفتے لگ سکتے ہیں۔ جس پر جج نے کمپنی کو ڈیٹا فراہم کرنے کے لیے 2 ہفتوں کی مہلت دی ہے۔ ایلون مسک کے وکیل نے ایک بیان میں کہا کہ ہم ٹوئٹر کی جانب سے کئی ماہ سے چھپائے گئے ڈیٹا کا تجزیہ کرنے کے لیے تیار ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.