Uncategorized

بلال یاسین پر قاتلانہ حملہ کیس، پولیس کو استعمال کیا گیا پستول مل گیا

بلال یاسین کے ہمراہ موجود سابق کونسلر میاں اکرام پہلے حملہ آوروں کے پیچھے دوڑتے ہیں، پھر واپس مڑ کر بلال یاسین کی طرف جاتے ہیں

ن لیگ کے رکن پنجاب اسمبلی بلال یاسین پر قاتلانہ حملے میں پولیس نے کو بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے پولیس نے حملے استعمال کیا گیا پستول پولیس کو مل گیا۔

تفصیلات کے مطابق حملے کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی سامنے آگئی، ملزمان نے جس پستول سے فائرنگ کی وہ فرار ہوتے وقت گر گیا، پستول کس کے نام پر رجسٹرڈ ہے؟ اس حوالے سے تفتیش جاری ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ پستول کو فارنزک کیلئے بھجوا دیا گیا ہے۔ واقعے کی سی سی ٹی وی میں بھی نظر آتا ہے کہ ایک ملزم فائرنگ کے بعد ساتھی کی چلتی ہوئی موٹر سائیکل پر سوار ہوتا ہے ، بلال یاسین کے ہمراہ موجود سابق کونسلر میاں اکرام پہلے حملہ آوروں کے پیچھے دوڑتے ہیں، پھر واپس مڑ کر بلال یاسین کی طرف جاتے ہیں۔ پولیس اب تک ملزمان کی شناخت نہیں کرسکی ہے۔ اسپتال میں زیرِ علاج بلال یاسین کی طبیعت میں بہتری آگئی ہے اور وہ کہتے ہیں کہ وہ میاں اکرام کو ملنے موہنی روڈ آئے تھے، بغیر نمبر پلیٹ کی موٹر سائیکل پر دو حملہ آور آئے، ملزمان نے جینز کی پینٹ اور جیکٹس پہن رکھیں تھیں ، انہوں نے موٹر سائیکل سے اتر کر فائرنگ کی ، ایک گولی پیٹ اور دوسری بائیں ٹانگ پر لگی ، نہیں جانتے انہیں کیوں نشانہ بنایا گیا۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ بلال یاسین کو مکمل فٹ ہونے میں 6 سے 9 ماہ کا عرصہ لگے گا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.